دنیا کو مالی بحران سے بچانے کیلئے تمام ممالک کو ملکر کام کرنا ہوگا : زاہد اقبال چوہدری

حکومت تاجر برادری کی مشکلات کے خاتمے کیلئے بھرپور کردار ادا کرے : نائب صدر ایف پی سی سی آئی

لاہور(بزنس رپورٹ)لاک ڈاؤن کے بعد زندگی پاکستانی معیشت کے علاوہ بین الاقوامی عناصر کی وجہ سے بھی متاثر ہوگی۔ مثال کے طور پر عرب ممالک میں کساد بازاری کی وجہ سے پاکستانی افراد قوت کی بیرون ملک ملازمتیں بری طرح متاثر ہوں گی۔
ان خیالات کا اظہار نائب صدر ایف پی سی سی آئی زاہد اقبال چوہدری نے کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ کاروباروں کو بھی کئی مسائل درپیش ہیں، جنہیں اس وقت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔ اس وقت لاک ڈاؤن کے باعث کاروباروں کو صرف مالی مسائل درپیش ہیں۔ لیکن ایسا نہیں ہے۔ کاروبار اس کے علاوہ بھی کئی مسائل کا شکار ہیں اور حکومت کو ان کی مدد کرنی چاہیے۔ ان مسائل میں ملازمین کو تحفظ کی عدم فراہمی، محفوظ ماحول کی عدم فراہمی، اور حکومت کے نافذ کردہ ضوابط کی تعمیل کرنے کے دوران مشکلات سرفہرست ہیں، اور یہ ویکسین ایجاد ہونے تک قائم رہیں گے۔

اگر دنیا کو مالی بحران سے بچانا ہے تو تمام ممالک کو ایک ساتھ کام کرنا ہوگا۔ کرونا وائرس وبا کسی ایک ملک تک محدود نہیں ہے، اور اسی لیے اس مسئلے کے حل کی ذمہ داری بھی کسی ایک ملک تک محدود نہیں ہوسکتی۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.